سورة یوسف - آیت 57

وَلَأَجْرُ الْآخِرَةِ خَيْرٌ لِّلَّذِينَ آمَنُوا وَكَانُوا يَتَّقُونَ

ترجمہ تیسیر القرآن - مولانا عبدالرحمن کیلانی صاحب

اور جو لوگ ایمان لائے اور اللہ سے ڈرتے رہے ان کے لئے آخرت [٥٦] کا اجر ہی بہتر ہے

السعدی تفسیر - عبدالرحمن بن ناصر السعدی

اس لئے فرمایا : (آیت) ” آخرت کا اجر (دنیا کے اجر سے) بہتر ہے“ (آیت) ” ان لوگوں کے لئے جو ایمان لائے اور اللہ سے ڈرتے رہے۔“ یعنی جن لوگوں میں تقویٰ اور ایمان جمع ہے۔ پس تقویٰ کے ذریعے سے حرام امور، یعنی کبیرہ اور صغیرہ گناہوں کو ترک کیا جاتا ہے اور ایمان کامل کے ذریعے سے ان امور میں تصدیق قلب حاصل ہوتی ہے جن امور کی تصدیق کرنے کی اللہ تعالیٰ نے حکم دیا ہے اور فرض و مستحب، اعمال قلوب اور اعمال جوارح، تصدیق قلب کی پیروی کرتے ہیں۔