سورة العنكبوت - آیت 26

فَآمَنَ لَهُ لُوطٌ ۘ وَقَالَ إِنِّي مُهَاجِرٌ إِلَىٰ رَبِّي ۖ إِنَّهُ هُوَ الْعَزِيزُ الْحَكِيمُ

ترجمہ ترجمان القرآن - مولانا ابوالکلام آزاد

اس پر لوط نے ابراہیم کی تصڈیق کی اور ابراہیم نے کہا میں اپنے رب کی طرف ہجرت کرتاہوں بے شک وہ زبردست اور کامل حکمت والا ہے

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

(١٥) ابراہیم (علیہ السلام) کی دعوت توحید کو ان کی قوم میں سے صرف ان کے بھتیجے لوط (علیہ السلام) اور ان کی بیوی سارہ نے قبول کیا اس کے بعد وہ اپنا وطن چھوڑ کر ملک شام کی طرف روانہ ہوگئے تاکہ وہاں پوری آزادی کے ساتھ اللہ ی عبادت کریں اور دوسروں کو اللہ کے دین کی طرف بلائیں، اللہ تعالیٰ نے انہیں اپنی راہ میں اذیتیں برداشت کرنے اور پھر اس کی رضامندی کی خاطر ہجرت کے صلہ میں اسحق جیسا بیٹا اور یعقوب جیسا پوتا عطا کیا اور ہمیشہ کے لیے نبوت اور آسمانی کتابوں کانزول ان کی اوالد کے ساتھ خاص کردیا چنانچہ ان کے بعد تمام انبیاء انہی کی اولاد میں پیدا ہوئے اور تمام آسمانی کتابیں بھی انہی پر نازل ہوئیں تورات موسیٰ پر، زبور داؤد پر، انجیل عیسیٰ پر، اور قرآن کریم نبی کریم پر اور یہ سب اولاد ابراہیم سے تھے اللہ تعالیٰ نے انہیں دنیا میں اولاد روزی اور اس بشارت سے نوازا کہ اب سارے انبیا انہی کی اولاد میں پیدا ہوں گے اور آخرت میں انہیں اکابرین صالحین کے ساتھ جنت میں اعلی مقام عطا فرمائے گا۔