سورة الاعراف - آیت 202

وَإِخْوَانُهُمْ يَمُدُّونَهُمْ فِي الْغَيِّ ثُمَّ لَا يُقْصِرُونَ

ترجمہ ترجمان القرآن - مولانا ابوالکلام آزاد

مگر جو لوگ شیطانوں کے بھائی بند ہیں تو انہیں وہ گمراہی میں کھینچے لیے جاتے ہیں اور پھر اس میں ذرا بھی کمی نہیں کرتے۔

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

لیکن جو اللہ سے نہیں ڈرتے، اور شیطان کے بھائی ہوتے ہیں، انہیں اللہ کے ذریعہ شیطان کے وسوسوں سے پناہ مانگنا یاد نہیں آتا اور شیاطین ان کے دل و دماغ میں کثرت سے شہبات پیدا کرتے ہیں، گناہوں کے ذریعہ شیطان کو وسو سوں سے پناہ مانگنا یاد نہیں آتا اور شیاطین ان کے دل ودماغ میں کثرت سے شہبات پیدا کرتے ہیں گناہوں کی خو شنما بنا کر پیش کرتے ہیں اور انہیں کر گذر نے کو ان کے لیے آسان بنا دیتے ہیں آخر کار وہ لوگ ان معاصی کا ارتکاب کر بیٹھتے ہیں، اور مستقبل میں اسی راہ پر چل پڑتے ہیں۔