سورة الصافات - آیت 169

لَكُنَّا عِبَادَ اللَّهِ الْمُخْلَصِينَ

ترجمہ ترجمان القرآن - مولانا ابوالکلام آزاد

تویقینا ہم اللہ کے برگزیدہ بندے ہوتے

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

١٦٩۔ ١ ذکر سے مراد کوئی کتاب الٰہی یا پیغمبر ہے، یعنی یہ کفار نزول قرآن سے پہلے کہا کرتے تھے کہ ہمارے پاس بھی کوئی آسمانی کتاب ہوتی، جس طرح پہلے لوگوں پر تورات وغیرہ نازل ہوئیں یا کوئی ہاوی ہمیں وعظ و نصیحت کرنے والا ہوتا، تو ہم بھی اللہ کے خالص بندے بن جاتے۔