سورة القصص - آیت 20

وَجَاءَ رَجُلٌ مِّنْ أَقْصَى الْمَدِينَةِ يَسْعَىٰ قَالَ يَا مُوسَىٰ إِنَّ الْمَلَأَ يَأْتَمِرُونَ بِكَ لِيَقْتُلُوكَ فَاخْرُجْ إِنِّي لَكَ مِنَ النَّاصِحِينَ

ترجمہ ترجمان القرآن - مولانا ابوالکلام آزاد

اور شہر کے کنارے سے ایک آدمی دوڑتا ہوا آیا کہا کہ اے موسیٰ ارکان سلطنت تمہارے قتل کے بارے میں مشورہ کررہے ہیں اب تم یہاں سے نکل جاؤ میں تمہیں خیرخواہانہ مشورہ دیتا ہوں

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

٢٠۔ ١ یہ آدمی کون تھا ؟ بعض کے نزدیک یہ فرعون کی قوم کا تھا جو در پردہ حضرت موسیٰ (علیہ السلام) کا خیر خواہ تھا۔ اور ظاہر ہے سرداروں کے مشورے کی خبر ایسے ہی آدمی کے ذریعے آنا زیادہ قرین قیاس ہے۔ بعض کے نزدیک یہ موسیٰ (علیہ السلام) کا قریبی رشتے دار اور اسرائیلی تھا۔ اور اقصائے شہر سے مراد منف ہے جہاں فرعون کا محل اور دارالحکومت تھا اور یہ شہر کے آخری کنارے پر تھا۔