سورة البلد - آیت 12

وَمَا أَدْرَاكَ مَا الْعَقَبَةُ

ترجمہ مکہ - مولانا جوناگڑھی صاحب

اور کیا سمجھا کہ گھاٹی ہے کیا ؟

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

(٥) اس گھاٹی اور دشوار گذار راہ کی تفسیر اللہ تعالیٰ نے یہ بیان کی کہ وہ کسی کی گردن سے طوق غلامی اتارپھینکنے میں مدد کرنی ہے، یعنی اسے خرید کر آزاد کردینا، یا جزوی طور پر اس کام میں اس کی مدد کرنا ہے، اسی ضمن میں کافروں کے ہاتھ سے مسلمان قیدی کا آزاد کرانابھی آتا ے۔ یا جب لوگ سخت قحط سالی میں مبتلا ہوں، شدید بھوک سے دوچار ہوں اور غذا کے بغیر لوگوں کی جانیں ہلاک ہو رہی ہوں، اس وقت کسی رشتہ دار یتیم کو یا کسی نہایت غریب و نادار کو کھانا کھلانا۔ مفسرین نے لکھا ہے کہ (یتیماذا مقربۃ) میں اس بات کی ترغیب دلائی گئی ہے کہ داد و دہش اور دیگر مالی تعاون و مدد میں رشتہ دار محتاجوں کو دوسروں پر مقدم رکھا جائے۔