سورة الرحمن - آیت 62

وَمِن دُونِهِمَا جَنَّتَانِ

ترجمہ مکہ - مولانا جوناگڑھی صاحب

اور ان کے سوا دو جنتیں اور ہیں (١)۔

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

(٢٣) آیت (٤٦) میں جن دونوں جنتوں کا ذکر آیا ہے اور جن کے نام بعضم فسرین نے جنت عدن اور جنت نعیم بتائے ہیں، ان کے علاوہ بھی دو جنتیں ہوں گی، جو پہلی دونوں سے درجے میں کم ہوں گی پہلی دونوں عرش کے زیادہ قریب ہوں گی، اور اللہ کے مقرب بندوں کو ملیں گی اور دوسری دونوں اصحاب الیمین کے لئے ہوں گی، اور ان دونوں کے نام جنت الفردوس اور جنت الماوی بتائے گئے ہیں ان دونوں جنتوں کے درخت ہی گھنے ہوں گے اور ان پر ایسی ہریالی چھائی ہوگی کہ ان کا رنگ مائل بہ سیاہی ہوگا۔ اور ان میں دو چشمے ہوں گے جن سے فوارے کی شکل میں پانی پھوٹ رہا ہوگا اور ان میں مختلف الانواع پھل ہوں گے، اور ان پھلوں میں کھجور اور انار بھی ہوں گے مفسرین لکھتے ہیں کہ ان دونوں کا ذکر خصوصی طور پر ان کی اہمیت و فضیلت کے پیش نظر کیا گیا ہے۔ اور چونکہ جنت میں موجود مذکورہ بالا نعمتوں کی یاد دہانی سننے والوں کو عمل صالح کی ترغیب دلاتی ہے، اسی لئے اللہ تعالیٰ نے ہر نعمت کا ذکر کرنے کے بعد فرمایا کہ اے جن و انس ! تم اپنے رب کی کن کن نعمتوں کو جھٹلاؤ گے؟!۔