سورة الحجر - آیت 78

وَإِن كَانَ أَصْحَابُ الْأَيْكَةِ لَظَالِمِينَ

ترجمہ مکہ - مولانا جوناگڑھی صاحب

ایک بستی کے رہنے والے بھی بڑے ظالم تھے (١)

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

(٣١) اصحاب ایکہ سے مراد شعیب (علیہ السلام) کی قوم ہے، یہ لوگ ایک ایسے علاقہ کے رہنے والے تھے جہاں کثرت سے درخت پائے جاتے تھے ان کا ظلم یہ تھا کہ وہ اللہ کے ساتھ غیروں کو شریک ٹھہراتے تھے راہ چلتے مسافروں کو لوٹ لیتے تھے، اور ناپ تول میں کمی کرتے تھے، تو اللہ نے شعیب (علیہ السلام) کو ان کی ہدایت کے لیے مبعوث فرمایا، لیکن انہوں نے ان کی تکذیب کی، تو اللہ تعالیٰ نے انہیں ہلاک کرنے کے لیے ایسا ایسا بادل بھیج دیا جس میں آگ تھی جس نے انہیں جلا کر خاکستر کردیا، قوم لوط اور قوم شعیب کی بستیاں شاہراہ پر ایک دوسرے کے قریب تھیں۔