سورة الصافات - آیت 62

أَذَٰلِكَ خَيْرٌ نُّزُلًا أَمْ شَجَرَةُ الزَّقُّومِ

ترجمہ مکہ - مولانا جوناگڑھی صاحب

کیا یہ مہمانی اچھی ہے یا (زقوم) کا درخت (١)

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

٦٢۔ ١ زَ قوْم تَزَقْم سے نکلا ہے، جس کے معنی بدبودار اور کریہ چیز کے نکلنے کے ہیں۔ اس درخت کا پھل بھی کھانا اہل جہنم کے کے لئے سخت ناگوار ہوگا۔