سورة العنكبوت - آیت 31

وَلَمَّا جَاءَتْ رُسُلُنَا إِبْرَاهِيمَ بِالْبُشْرَىٰ قَالُوا إِنَّا مُهْلِكُو أَهْلِ هَٰذِهِ الْقَرْيَةِ ۖ إِنَّ أَهْلَهَا كَانُوا ظَالِمِينَ

ترجمہ مکہ - مولانا جوناگڑھی صاحب

اور جب ہمارے بھیجے ہوئے فرشتے حضرت ابراہیم (علیہ السلام) کے پاس بشارت لے کر پہنچے کہنے لگے کہ اس بستی والوں کو ہم ہلاک کرنے والے ہیں (١) یقیناً یہاں کے رہنے والے گنہگار ہیں۔

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

٣١۔ ١ یعنی حضرت لوط (علیہ السلام) کی دعا قبول فرمائی گئی اور اللہ تعالیٰ نے فرشتوں کو ہلاک کرنے کے لئے بھیج دیا۔ وہ فرشتے پہلے حضرت ابراہیم (علیہ السلام) کے پاس گئے اور انھیں اسحاق (علیہ السلام) و یعقوب (علیہ السلام) کی خوشخبری دی اور ساتھ ہی بتلایا کہ ہم لوط (علیہ السلام) کی بستی ہلاک کرنے آئے ہیں۔