سورة الأعلى - آیت 14

قَدْ أَفْلَحَ مَن تَزَكَّىٰ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

وہ شخص فلاح پا گیا جس نے پاکیزگی اختیار کی

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

(٦) یہاں اللہ تعالیٰ نے اپنے اس بندہ مومن کو کامیابی و کامرانی کی خبر دی ہے جو اپنے نفس کو شرک و معاصی سے پاک کرتا ہے، ہر وقت اپنے رب کو یاد کرتا رہتا ہے اور عمل صالح کرتا رہتا ہے اور بالخصوص نماز کی پابندی کرتا ہے جو ایمان کی کسوٹی ہے۔ یہاں فوز و فالح سے مراد جہنم سے نجات اور جنت میں داخل ہونا ہے، جیسا کہ اللہ تعالیٰ نے سورۃ آل عمران آیت (١٨٥) میں فرمایا ہے : (فمن زحزح عن الاروا ذخل الجنۃ فقد فاز) ” پس جو شخص آگ سے ہٹا دیا جائے گا اور جنت میں داخل کردیا جائے گا وہ کامیاب ہوجائے گا۔ “