سورة النجم - آیت 50

وَأَنَّهُ أَهْلَكَ عَادًا الْأُولَىٰ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اور بے شک اسی نے عاد اولیٰ کو ہلاک کیا

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

(٢٥) اور وہی ہے جس نے عاد اول کی قوم کو ہلاک کردیا تھا، انہیں ” عاد اول“ اس لئے کہا گیا ہے کہ ان کا زمانہ قوم ثمود سے پہلے کا ہے بعض نے کہا ہے کہ اس سے مراد قوم ہود ہے اور عاد آخر قوم ارم کو کہتے ہیں۔ اور اسی نے قوم ثمود کو ہلاک کردی، یعنی اللہ نے جس طرح قوم عاد کو ہلاک کردیا، اسی طرح قوم ثمود کو بھی ہلاک کردی، دونوں قوموں میں سے کسیک و نہیں چھوڑا اور اسی نے ان دونوں قوموں سے پہلے قوم نوح کو ہلاک کردیا تھا جو عاد و ثمود سے بھی زیادہ ظالم اور سرکش ہوگئی تھی۔ اور اسی نے قوم لوط کی بستیوں کو الٹ دیا تھا اور جبریل کے ہاتھوں اوپر لے جا کر زمین پر دے مارا تھا پھر ان پر پتھروں کی بارش کر کے انہیں ڈھانک دیا تھا، جیسا کہ سورۃ الحجر آیت (٧٤) میں آیا ہے : (فجعلنا عالیھا سافلھا وامطرنا علیھم حجارۃ من سجیل) یعنی ” بالاخر ہم نے اس شہر کو اوپر تلے کردیا اور ان لوگوں پر کنکر والے پتھر برسا دیئے۔ “