سورة الصافات - آیت 83

وَإِنَّ مِن شِيعَتِهِ لَإِبْرَاهِيمَ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اور نوح کی جماعت کے ساتھ ہی ابراہیم کا تعلق تھا

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

21 دوسرا واقعہ ابراہیم (علیہ السلام) کا ہے۔ اللہ تعالیٰ نے فرمایا کہ ابراہیم ایمان اور توحید کی طرف لوگوں کو بلانے میں نوح کی راہ پر ہی گامزن تھے وہ بھی اپنے رب کی طرف ایسے دل کے ساتھ متوجہ ہوئے تھے جو شرک و شک کی آلائشوں سے یکسر پاک اور فطری طور پر توحید کی طرف مکمل طور پر مائل تھا، اسی لئے انہوں نے اپنے باپ اور اپنی قوم کی بت پرستی پر نکیر کی اور ان سے کہا کہ کیا تم اللہ کے خلاف افتراپردازی کرتے ہوئے اپنے لئے اس کے سوا دوسروں کو معبود بتاتے ہو اور رب العالمین کی عبادت چھوڑ کر غیروں کی پرستش کرتے ہو، حالانکہ یہ بات متہارے وہم و گمان میں بھی نہیں آنی چاہئے کہ اس کے سوا کوئی دوسرا عبادت کا مستحق ہوسکتا ہے۔