سورة الفرقان - آیت 56

وَمَا أَرْسَلْنَاكَ إِلَّا مُبَشِّرًا وَنَذِيرًا

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اے نبی آپ کوہم نے بشارت دینے والا اور خبردار کرنے والا بناکر بھیجا ہے۔“ (٥٦)

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

26۔ اللہ تعالیٰ نے اپنی نبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) سے فرمایا کہ ہم نے تو آپ کو جنت کی خوشخبری اور جہنم سے ڈرانے کے لیے بھیجا ہے۔ تو آپ اپنا کام کرتے رہئے، اور اس فکر سے پریشان نہ ہوئیے کہ کون اسلام لے آیا اور کون کفر پر مصر رہا۔ اس لیے کہ ہدایت کی توفیق دینا ہمارا کام ہے، ہم جسے چاہتے ہیں ہدایت دیتے ہیں اور جسے چاہتے ہیں کفر و ضلالت میں بھٹکتا چھوڑ دیتے ہیں۔ اور اللہ کسے ہدایت دیتا ہے اور کسے نہیں، اس کی تفصیل بارہا گذر چکی ہے کہ جو اللہ سے ہدایت مانگتا ہے اور مسلسل مانگتا رہتا ہے، اللہ ہدایت دیتا ہے اور جو اپنے لیے گمراہی کو پسند کرتا ہے اور اس پر اصرار کرتا ہے، تو اللہ اسے گمراہ کردیتا ہے