سورة الإسراء - آیت 89

وَلَقَدْ صَرَّفْنَا لِلنَّاسِ فِي هَٰذَا الْقُرْآنِ مِن كُلِّ مَثَلٍ فَأَبَىٰ أَكْثَرُ النَّاسِ إِلَّا كُفُورًا

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اور بلاشبہ ہم نے لوگوں کے لیے اس قرآن میں ہر مثال پھیر پھیر کر بیان کی مگر اکثر لوگوں نے کفر کے سوا ہر چیز سے انکار کردیا۔“ (٨٩)

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

(٥٧) اللہ تعالیٰ نے انسانوں کی ہدایت کے لیے اس قرآن کریم میں ہر وہ بات اور مثال بیان کردی ہے جس میں غور و فکر انہیں راہ راست پر لاکھڑا کردے، لیکن بنی نوع انسان کا حال عجیب رہا ہے کہ اکثر لوگوں نے اس سے کوئی فائدہ نہیں اٹھایا، بلکہ کفر کی راہ اختیار کرلی اور قرآن کی تکذیب کی، اور یہ اس قضائے الہی کے مطابق ہوا ہے کہ قیامت کے دن اللہ تعالیٰ لشکر ابلیس سے جہنم کو بھردے گا۔