سورة البينة - آیت 1

لَمْ يَكُنِ الَّذِينَ كَفَرُوا مِنْ أَهْلِ الْكِتَابِ وَالْمُشْرِكِينَ مُنفَكِّينَ حَتَّىٰ تَأْتِيَهُمُ الْبَيِّنَةُ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اہل کتاب اور مشرکین میں سے جو لوگ کافر تھے وہ باز آنے والے نہ تھے جب تک کہ ان کے پاس روشن دلیل نہ آ جائے

السعدی تفسیر - عبدالرحمن بن ناصر السعدی

اللہ تبارک وتعالی فرماتا ہے (لَمْ یَکُنِ الَّذِیْنَ کَفَرُوْا مِنْ اَہْلِ الْکِتٰبِ) نہیں ہیں وہ لوگ جنہوں نے کفر کیا اہل کتاب میں سے۔ یعنی یہودونصاری میں سے (والمشرکین) اور مشرکین اور دیگر قوموں کی تمام اصناف میں سے (منفکین) باز آنے والے۔ یعنی یہ سب اپنے کفر اور ضلالت سے جدا نہیں ہوں گے وہ اپنی گمراہی اور ضلالت میں بھٹکے رہیں گے اور مرور اوقات ان کے کفر پر اضافہ ہی کرے گا۔ ( حَتّٰی تَاْتِیَہُمُ الْبَیِّنَۃُ) یہاں تک کہ ان کے پاس واضح دلیل اور نمایاں برہان آجائے۔ پھر (البینۃ) کی تفسیر بیان کرتے ہوئے فرمایا۔