سورة المزمل - آیت 14

يَوْمَ تَرْجُفُ الْأَرْضُ وَالْجِبَالُ وَكَانَتِ الْجِبَالُ كَثِيبًا مَّهِيلًا

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اس دن زمین اور پہاڑ لرز اٹھیں گے اور پہاڑوں کا حال یہ ہوگا کہ جیسے ریت کے بکھرے ہوئے ڈھیرہیں

السعدی تفسیر - عبدالرحمن بن ناصر السعدی

(یَوْمَ تَرْجُفُ الْاَرْضُ وَالْجِبَالُ) جس روز زمین اور پہاڑ بہت بڑے خوف سے کانپ اٹھیں گے ( وَکَانَتِ الْجِبَالُ) اور زمین پر مضبوطی سے جمے ہوئے ٹھوس اور سخت پہاڑ ( کَثِیْبًا مَّہِیْلًا) ریت کے بھر بھرے ٹیلے بن جائیں گے یعنی بکھری ہوئی ریت کی مانند، پھر اس کے بعد یہ ریت آہستہ آہستہ پھیل کر اڑتا ہوا غبار بن جائے گی۔