سورة الواقعة - آیت 88

فَأَمَّا إِن كَانَ مِنَ الْمُقَرَّبِينَ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

پھر وہ مرنے والا اگر مقربین میں سے ہو

السعدی تفسیر - عبدالرحمن بن ناصر السعدی

اللہ تبارک تعالیٰ نے اس سورۃ مبارکہ کے اوائل میں قیامت کے دن تین گروہوں، یعنی مقربین، اصحاب یمین، اور مکذبین کے احوال کا ذکر فرمایا پھر اس کے آخر میں ان کے ان احوال کا ذکر فرمایا جب موت کا وقت آپہنچے گا چنانچہ فرمایا (فَاَمَّآ اِنْ کَانَ مِنَ الْمُقَرَّبِیْنَ) اگر مرنے والا اللہ تعالیٰ کے مقرب بندوں میں سے ہوگا اور یہ وہ لوگ ہوں گے جو واجبات ومستحبات کی ادائیگی اور محرمات ومکروہات اور بے فائدہ مباحات سے اجتناب کے ذریعے سے اللہ کے تقرب کے حصول میں کوشاں رہے ہوں گے۔