سورة الفلق - آیت 4

وَمِن شَرِّ النَّفَّاثَاتِ فِي الْعُقَدِ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اور گرہوں میں پھونکنے والیوں کے شر سے

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

٤۔ ١ نفاثات، مونث کا صیغہ ہے، جو النفوس (موصوف محذوف) کی صفت ہے من شر النفوس النفاثات یعنی گرہوں میں پھونکنے والے نفسوں کی برائی سے پناہ اس سے مراد جادو کا کالا عمل کرنے والے مرد اور عورت دونوں ہیں یعنی اس میں جادوگروں کی شرارت سے پناہ مانگی گئی ہے، جادوگر پڑھ پڑھ کر پھونک مارتے اور گرہ لگاتے جاتے ہیں۔ عام طور پر جس پر جادو کرنا ہوتا ہے اس کے بال یا کوئی چیز حاصل کر کے اس پر یہ عمل کیا جاتا ہے۔