سورة الطارق - آیت 12

وَالْأَرْضِ ذَاتِ الصَّدْعِ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اور پھٹ جانے والی زمین کی

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

١٢۔ ١ یعنی زمین پھٹتی ہے تو اس سے پودا باہر نکلتا ہے، زمین پھٹتی ہے تو اس سے چشمہ جاری ہوتا ہے اور اسی طرح ایک دن آئے گا کہ زمین پھٹے گی، سارے مردے زندہ ہو کر باہر نکل آئیں گے۔ اس لیے زمین کو پھٹنے والی اور شگاف والی کہا۔