سورة المطففين - آیت 3

وَإِذَا كَالُوهُمْ أَو وَّزَنُوهُمْ يُخْسِرُونَ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اور جب ان کو ناپ کر یا تول کردیتے ہیں تو کم دیتے ہیں

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

٣۔ ١ یعنی لینے اور دینے کے الگ الگ پیمانے رکھنا اور اس طرح ڈنڈی مار کر ناپ تول میں کمی کرنا، بہت بڑی اخلاقی بیماری ہے، جس کا نتیجہ دین اور آخرت میں تباہی ہے۔ ایک حدیث ہے، جو قوم ناپ تول میں کمی کرتی ہے، تو اس پر قحط سالی، سخت محنت اور حکمرانوں کا ظلم مسلط کردیا جاتا ہے۔