سورة القيامة - آیت 27

وَقِيلَ مَنْ ۜ رَاقٍ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اور کہا جائے گا کہ ہے کوئی جھاڑ پھونک کرنے والا۔ ؟

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

٢٧۔ ١ یعنی حاضرین میں سے کوئی ہے جو جھاڑ پھونک کے ذریعہ سے تمہیں موت کے پنجے سے چھڑا لے۔ بعض نے اس کا ترجمہ یہ بھی کیا ہے کہ اس کی روح کون لے کر چڑھے گا ملائکہ رحمت یا ملائکہ عذاب؟ اس صورت میں یہ قول فرشتوں کا ہے۔