سورة الرحمن - آیت 4

عَلَّمَهُ الْبَيَانَ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اور اسے بولنا سکھایا

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

٤۔ ٣ اس بیان سے مراد ہر شخص کی اپنی مادری بولی ہے جو بغیر سیکھے از خود ہر شخص بول لیتا اور اس میں اپنے مافی الضمیر کا اظہار کرلیتا ہے، حتیٰ کے وہ چھوٹا بچہ بھی بول لیتا ہے، جس کو کسی بات کا علم اور شعور نہیں ہوتا۔ یہ تعلیم الٰہی کا نتیجہ ہے جس کا ذکر اس آیت میں ہے۔