سورة النمل - آیت 34

قَالَتْ إِنَّ الْمُلُوكَ إِذَا دَخَلُوا قَرْيَةً أَفْسَدُوهَا وَجَعَلُوا أَعِزَّةَ أَهْلِهَا أَذِلَّةً ۖ وَكَذَٰلِكَ يَفْعَلُونَ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

ملکہ نے کہا کہ بادشاہ جب کسی ملک میں گھس آتے ہیں تو اسے برباد اور اس کے عزت والوں کو ذلیل کردیتے ہیں یہی کچھ وہ کریں گے۔ (٣٤)

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

٣٤۔ ١ یعنی طاقت کے ذریعے سے فتح کرتے ہوئے۔ ٣٤۔ ٢ یعنی قتل و غارت گری کرکے اور قیدی بنا کر۔ ٣٤۔ ٣ بعض مفسرین کے نزدیک یہ اللہ کا قول ہے جو ملکہ سبا کی تائید میں ہے اور بعض کے نزدیک یہ بلقیس ہی کا کلام اور اس کا تتمہ ہے اور یہی سیاق کے زیادہ قریب ہے۔