سورة الشعراء - آیت 91

وَبُرِّزَتِ الْجَحِيمُ لِلْغَاوِينَ

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

اور دوزخ گمراہ لوگوں کے سامنے کھڑی کی جائے گی۔“ (٩١)

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

٩١۔ ١ مطلب یہ ہے کہ جنت اور دوزخ میں داخل ہونے سے پہلے ان کو سامنے کردیا جائے گا۔ جس سے کافروں کے غم میں اور اہل ایمان کے سرور میں مذید اضافہ ہوجائے گا۔