سورة مريم - آیت 95

وَكُلُّهُمْ آتِيهِ يَوْمَ الْقِيَامَةِ فَرْدًا

ترجمہ فہم القرآن - میاں محمد جمیل

قیامت کے دن سب اکیلے اکیلے اس کے سامنے حاضر ہوں گے۔“ (٩٥)

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

٩٥۔ ١ یعنی کوئی کسی کا مددگار نہیں ہوگا، نہ مال ہی وہاں کچھ کام آئے گا (یَوْمَ لَا یَنْفَعُ مَالٌ وَّلَا بَنُوْنَ) 26۔ الشعراء :88) اس دن نہ مال نفع دے گا، نہ بیٹے، ہر شخص کو تنہا اپنا اپنا حساب دینا پڑے گا اور جن کی بابت انسان دنیا میں یہ سمجھتا ہے کہ یہ میرے وہاں حمائتی اور مددگار ہوں گے، وہاں سب غائب ہوجائیں گے۔ کوئی کسی کی مدد کے لئے حاضر نہیں ہوگا۔