سورة عبس - آیت 10

فَأَنتَ عَنْهُ تَلَهَّىٰ

ترجمہ عبدالسلام بھٹوی - عبدالسلام بن محمد

تو تو اس سے بے توجہی کرتا ہے۔

تفسیر مکی - مولانا صلاح الدین یوسف صاحب

١٠۔ ١ یعنی ایسے لوگوں کی قدر افزائی کی ضرورت ہے نہ کہ ان سے بے رخی برتنے کی۔ ان آیات سے یہ معلوم ہوا کہ دعوت و تبلیغ میں کسی کو خاص نہیں کرنا چاہیے بلکہ صاحب حیثیت اور بے حیثیت، امیر اور غریب، آقا اور غلام مرد اور عورت، چھوٹے اور بڑے سب کو یکساں حیثیت دی جائے اور سب کو مشترکہ خطاب کیا جائے۔