جامع الترمذي - حدیث 1837

أَبْوَابُ الْأَطْعِمَةِ عَنْ رَسُولِ اللَّهِ ﷺ بَاب مَا جَاءَ فِي أَيِّ اللَّحْمِ كَانَ أَحَبَّ إِلَى رَسُولِ اللَّهِ ﷺ​ صحيح حَدَّثَنَا وَاصِلُ بْنُ عَبْدِ الْأَعْلَى حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ فُضَيْلٍ عَنْ أَبِي حَيَّانَ التَّيْمِيِّ عَنْ أَبِي زُرْعَةَ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ قَالَ أُتِيَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بِلَحْمٍ فَرُفِعَ إِلَيْهِ الذِّرَاعُ وَكَانَتْ تُعْجِبُهُ فَنَهَسَ مِنْهَا قَالَ وَفِي الْبَاب عَنْ ابْنِ مَسْعُودٍ وَعَائِشَةَ وَعَبْدِ اللَّهِ بْنِ جَعْفَرٍ وَأَبِي عُبَيْدَةَ قَالَ أَبُو عِيسَى هَذَا حَدِيثٌ حَسَنٌ صَحِيحٌ وَأَبُو حَيَّانَ اسْمُهُ يَحْيَى بْنُ سَعِيدِ بْنِ حَيَّانَ وَأَبُو زَرْعَةَ بْنُ عَمْرِو بْنِ جَرِيرٍ اسْمُهُ هَرِمٌ

ترجمہ جامع ترمذی - حدیث 1837

کتاب: کھانے کے احکام ومسائل رسول اللہ ﷺکو کون ساگوشت زیادہ پسندتھا​؟ ابوہریرہ رضی اللہ عنہ کہتے ہیں: نبی اکرم ﷺ کی خدمت میں گوشت لایاگیا اورآپ کو دستپیش کی گئی ، آپ کودست بہت پسندتھی، چنانچہ آپ نے اسے دانت سے نوچ کرکھایا۔ امام ترمذی کہتے ہیں:۱- یہ حدیث حسن صحیح ہے،۲- اس باب میں ابن مسعود، عائشہ ، عبداللہ بن جعفر اورابو عبیدہ رضی اللہ عنہم سے بھی احادیث آئی ہیں،۳- ابوحیان کانام یحیی بن سعید بن حیان ہے اورابوزرعہ بن عمروبن جریرکانام ہرم ہے۔