سنن النسائي - حدیث 5656

كِتَابُ الْأَشْرِبَةِ الْإِذْنُ فِي شَيْءٍ مِنْهَا صحيح أَخْبَرَنَا مُحَمَّدُ بْنُ مَعْدَانَ بْنِ عِيسَى بْنِ مَعْدَانَ الْحَرَّانِيُّ قَالَ حَدَّثَنَا الْحَسَنُ بْنُ أَعْيَنَ قَالَ حَدَّثَنَا زُهَيْرٌ قَالَ حَدَّثَنَا زُبَيْدٌ عَنْ مُحَارِبٍ عَنْ ابْنِ بُرَيْدَةَ عَنْ أَبِيهِ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِنِّي كُنْتُ نَهَيْتُكُمْ عَنْ ثَلَاثٍ زِيَارَةِ الْقُبُورِ فَزُورُوهَا وَلْتَزِدْكُمْ زِيَارَتُهَا خَيْرًا وَنَهَيْتُكُمْ عَنْ لُحُومِ الْأَضَاحِيِّ بَعْدَ ثَلَاثٍ فَكُلُوا مِنْهَا مَا شِئْتُمْ وَنَهَيْتُكُمْ عَنْ الْأَشْرِبَةِ فِي الْأَوْعِيَةِ فَاشْرَبُوا فِي أَيِّ وِعَاءٍ شِئْتُمْ وَلَا تَشْرَبُوا مُسْكِرًا

ترجمہ سنن نسائی - حدیث 5656

کتاب: مشروبات سے متعلق احکام و مسائل (مذکورہ برتنوں میں سے )ہر ایک میں اجازت کا بیان حضرت بریدہ ﷜ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلمنے فرمایا :’’ میں نے تمھیں تین چیزوں سے روکا تھا : قبروں کی زیارت سے ۔ اب تم زیارت کیا کرو کیو نکہ امید ہےقبروں کی زیارت تمھاری نیکی میں اضافے کاباعث ہوگی ۔ (یا لیکن قبروں کی زیارت سے تمھاری نیکی میں اضافہ ہونا چاہیے -) میں نے تمھیں تین دن سے زائد قربانی کے گوشت (کھانے ) سے روکا تھا ۔ اب جب تک چاہو کھاؤ ۔اور میں نے تمھیں چند برتنوں میں نبیذ وغیرہ بنانے سے روکا تھا ، اب تم جس برتن میں چاہو ، بناؤ اور پیو لیکن نشہ آور مشروب نہ پیو ۔،، ’’لیکن قبروں کی زیارت ، یعنی قبروں کی زیارت کا مقصد صرف تبرک نہیں جیسا کہ عموما ہوتا ہے کہ صالحین کی قبور کی زیارت صرف تبرک کے لیے کی جاتی ہے بلکہ قبروں کی زیارت آخرت کو یاد کرنے ، مو ت اور قبر کی طرف متوجہ ہو نے اور اصلاح اعمال کے لیے ہو نی چاہیے۔