سنن النسائي - حدیث 5580

كِتَابُ الْأَشْرِبَةِ تَأْوِيلُ قَوْلِ اللَّهِ تَعَالَى: {وَمِنْ ثَمَرَاتِ النَّخِيلِ وَالْأَعْنَابِ تَتَّخِذُونَ مِنْهُ سَكَرًا وَرِزْقًا حَسَنًا} [النحل: 67] صحيح الإسناد أَخْبَرَنَا سُوَيْدٌ قَالَ أَنْبَأَنَا عَبْدُ اللَّهِ عَنْ سُفْيَانَ عَنْ أَبِي حَصِينٍ عَنْ سَعِيدِ بْنِ جُبَيْرٍ قَالَ السَّكَرُ حَرَامٌ وَالرِّزْقُ الْحَسَنُ حَلَالٌ

ترجمہ سنن نسائی - حدیث 5580

کتاب: مشروبات سے متعلق احکام و مسائل اللہ تعالی کے فرمان :’’اور کھجوروں انگوروں کے کچھ پھلوں سے تم نشہ آور مشروب اور اچھا (حلال وعمدہ ) رزق تیار کرتے ہو۔،، حضرت سعید بن جبیر نے فرما یا : سکر (نشہ آور مشروب )حرام ہے ۔ اور رزق حسن (نبیذ وغیرہ )حلال ہے ۔ مختلف بابعین کے اقوال نقل کرنے سے مقصود یہ ہے کہ کوفی ،بصری اور مکی تابعین کے نزدیک انگور کی طرح کھجور سے بھی شراب تیار ہوسکتی ہے ۔اور یہی مسلک جمہور اہل علم اور محدثین وفقہاء کا ہے ۔