سنن النسائي - حدیث 5532

كِتَابُ الِاسْتِعَاذَةِ الِاسْتِعَاذَةُ مِنَ الْخَسْفِ صحيح أَخْبَرَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْخَلِيلِ قَالَ حَدَّثَنَا مَرْوَانُ هُوَ ابْنُ مُعَاوِيَةَ عَنْ عَلِيِّ بْنِ عَبْدِ الْعَزِيزِ عَنْ عُبَادَةَ بْنِ مُسْلِمٍ الْفَزَارِيِّ عَنْ جُبَيْرِ بْنِ أَبِي سُلَيْمَانَ عَنْ ابْنِ عُمَرَ قَالَ كَانَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ اللَّهُمَّ فَذَكَرَ الدُّعَاءَ وَقَالَ فِي آخِرِهِ أَعُوذُ بِكَ أَنْ أُغْتَالَ مِنْ تَحْتِي يَعْنِي بِذَلِكَ الْخَسْفَ

ترجمہ سنن نسائی - حدیث 5532

کتاب: اللہ تعالیٰ کی پناہ حاصل کرنے کا بیان دھنسائے جانے سے اللہ تعالی کی پناہ مانگنا حضرت ابن عمررضی اللہ عنہا نے فرمایا کہ نبئ اکرم ﷺ نے فرمایا کرتےتھے :اےاللہ! پھر راوی نے دعا ذکر کی جس کے آخر میں یہ لفظ ہیں ۔ میں اس بات سے تیری پناہ میں آتا ہوں کہ مجھے نیچے سے اچانک ہلاک کر دیاجائے ۔ ان الفاظ سے آپ کامقصد دھنسائےجانے سے پناہ طلب کرنا تھا۔