سنن النسائي - حدیث 4693

كِتَابُ الْبُيُوعِ مَطْلُ الْغَنِيِّ حسن أَخْبَرَنِي مُحَمَّدُ بْنُ آدَمَ، قَالَ: حَدَّثَنَا ابْنُ الْمُبَارَكِ، عَنْ وَبْرِ بنِ أَبِي دُلَيْلَةَ، عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ مَيْمُونٍ، عَنْ عَمْرِو بْنِ الشَّرِيدِ، عَنْ أَبِيهِ، قَالَ: قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: «لَيُّ الْوَاجِدِ يُحِلُّ عِرْضَهُ وَعُقُوبَتَهُ»

ترجمہ سنن نسائی - حدیث 4693

کتاب: خریدو فروخت سے متعلق احکام و مسائل مال دار شخص کا ادائگی میں ٹال مٹول کرنا حضرت شرید رضی اللہ تعالٰی عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا: ’’ادائیگی کی گنجائش رکھنے والا شخص ادائیگی میں ٹال مٹول کرے تو اس کی بے عزتی کی جا سکتی ہے اور اسے سزا بھی دی جا سکتی ہے۔‘‘ بے عزتی تو قرض خواہ کرے گا کہ اسے لوگوں کے سامنے دلیل کرے اور سزا حکومت دے گی کہ اسے قید کر دے۔