سنن النسائي - حدیث 4258

كِتَابُ الْفَرَعِ وَالْعَتِيرَةِ النَّهْيُ عَنِ الِانْتِفَاعِ بِجُلُودِ السِّبَاعِ صحيح أَخْبَرَنَا عُبَيْدُ اللَّهِ بْنُ سَعِيدٍ، عَنْ يَحْيَى، عَنْ ابْنِ أَبِي عَرُوبَةَ، عَنْ قَتَادَةَ، عَنْ أَبِي الْمَلِيحِ، عَنْ أَبِيهِ، «أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ نَهَى عَنْ جُلُودِ السِّبَاعِ»

ترجمہ سنن نسائی - حدیث 4258

کتاب: فرع اور عتیرہ سے متعلق احکام و مسائل درندوں کے چمڑے سے فائدہ اٹھانے کی ممانعت حضرت ابوالملیح کے والد محترم (حضرت اسامہ رضی اللہ تعالٰی عنہ ) سے روایت ہے کہ نبی اکرمﷺ نے درندوں کے چمڑے استعمال کرنے سے منع فرمایا۔ درندوں کے چمڑے عموماََ متکبر لوگ استعمال کرتے ہیں، اس لیے ان کے استعمال سے منع فرمایا جس طرح مسلمان مردوں کو سونے اور ریشم کے استعمال سے منع فرمایا گیا ہے۔ شیر اور چیتے وغیرہ کا چمڑا عام استعمال میں تھا۔ ممکن ہے دباغت کے بغیر استعمال کیا گیا ہو لیکن یہ مرجوع احتمال ہے۔ صحیح بات پہلی ہی ہے۔