سنن النسائي - حدیث 3701

كِتَابُ الْوَصَايَا اجْتِنَابُ أَكْلِ مَالِ الْيَتِيمِ صحيح أَخْبَرَنَا الرَّبِيعُ بْنُ سُلَيْمَانَ قَالَ حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ عَنْ سُلَيْمَانَ بْنِ بِلَالٍ عَنْ ثَوْرِ بْنِ زَيْدٍ عَنْ أَبِي الْغَيْثِ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ اجْتَنِبُوا السَّبْعَ الْمُوبِقَاتِ قِيلَ يَا رَسُولَ اللَّهِ مَا هِيَ قَالَ الشِّرْكُ بِاللَّهِ وَالشُّحُّ وَقَتْلُ النَّفْسِ الَّتِي حَرَّمَ اللَّهُ إِلَّا بِالْحَقِّ وَأَكْلُ الرِّبَا وَأَكْلُ مَالِ الْيَتِيمِ وَالتَّوَلِّي يَوْمَ الزَّحْفِ وَقَذْفُ الْمُحْصَنَاتِ الْغَافِلَاتِ الْمُؤْمِنَاتِ

ترجمہ سنن نسائی - حدیث 3701

کتاب: وصیت سے متعلق احکام و مسائل یتیم کا مال کھانے سے اجتناب کرنا چاہیے حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا: ’’سات مہلک کاموں سے بچو۔‘‘ پوچھا گیا‘ اے اللہ کے رسول! وہ کون سے ہیں؟ آپ نے فرمایا: ’’اللہ کے ساتھ شریک ٹھہرانا‘ جادو کرنا‘ جس جان کو اللہ تعالیٰ نے محترم بنایا ہے اسے قتل کرڈالنا سوائے اس کے کہ حق کے ساتھ ہو‘ سود کھانا‘ یتیم کا مال کھانا‘ جنگ کے دن بھاگ جانا اور پاک دامن بھولی بھالی مومن عورتوں پر تہمت لگانا۔‘‘