سنن النسائي - حدیث 3385

كِتَابُ النِّكَاحِ اللَّهْوُ وَالْغِنَاءُ عِنْدَ الْعُرْسِ حسن أَخْبَرَنَا عَلِيُّ بْنُ حُجْرٍ قَالَ حَدَّثَنَا شَرِيكٌ عَنْ أَبِي إِسْحَقَ عَنْ عَامِرِ بْنِ سَعْدٍ قَالَ دَخَلْتُ عَلَى قُرَظَةَ بْنِ كَعْبٍ وَأَبِي مَسْعُودٍ الْأَنْصَارِيِّ فِي عُرْسٍ وَإِذَا جَوَارٍ يُغَنِّينَ فَقُلْتُ أَنْتُمَا صَاحِبَا رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ وَمِنْ أَهْلِ بَدْرٍ يُفْعَلُ هَذَا عِنْدَكُمْ فَقَالَ اجْلِسْ إِنْ شِئْتَ فَاسْمَعْ مَعَنَا وَإِنْ شِئْتَ اذْهَبْ قَدْ رُخِّصَ لَنَا فِي اللَّهْوِ عِنْدَ الْعُرْسِ

ترجمہ سنن نسائی - حدیث 3385

کتاب: نکاح سے متعلق احکام و مسائل شادی کے وقت گانے بجانے کا بیان حضرت عامر بن سعد سے منقول ہے کہ میں قرظہ بن کعب اور ابو مسعود انصاری رضی اللہ عنہ کے پاس ایک شادی میں گیا تو وہاں بچیاں گا رہی تھیں۔ میں نے کہا: آپ دونوں رسول اللہﷺ کے بدری صحابی ہیں۔ آپ کی موجودگی میں یہ کچھ ہورہا ہے؟ وہ کہنے لگے: جی چاہتا ہے تو ہمارے ساتھ بیٹھ جا اور سن‘ نہیں تو جا۔ شادی کے موقع پر ہمیں گانے بجانے کی رخصت دی گئی ہے۔ تفصیل کے لیے دیکھیے ح نمبر 3371 اور اسکا فائدہ۔