سنن النسائي - حدیث 2730

الْمَوَاقِيتِ الْقِرَانُ صحيح أَخْبَرَنَا مُجَاهِدُ بْنُ مُوسَى عَنْ هُشَيْمٍ عَنْ يَحْيَى وَعَبْدُ الْعَزِيزِ بْنُ صُهَيْبٍ وَحُمَيْدٌ الطَّوِيلُ ح وَأَنْبَأَنَا يَعْقُوبُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ قَالَ أَنْبَأَنَا هُشَيْمٌ قَالَ أَنْبَأَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ بْنُ صُهَيْبٍ وَحُمَيْدٌ الطَّوِيلُ وَيَحْيَى بْنُ أَبِي إِسْحَقَ كُلُّهُمْ عَنْ أَنَسٍ سَمِعُوهُ يَقُولُ سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ لَبَّيْكَ عُمْرَةً وَحَجًّا لَبَّيْكَ عُمْرَةً وَحَجًّا

ترجمہ سنن نسائی - حدیث 2730

کتاب: مواقیت کا بیان عمرے اور حج کا اکٹھا احرام باندھنا حضرت انس رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ میں نے رسول اللہﷺ کو [لَبَّیْکَ عُمْرَۃً وَّ حَجًّا] ’’اے اللہ! میں تیرے سامنے حج و عمرے کے لیے حاضر ہوں۔‘‘ فرماتے ہوئے سنا۔ معلوم ہوا آپ نے قران کیا تھا اور یہی صحیح ہے۔ آپ اس وقت یہی کر سکتے تھے۔ صرف حج، ابتدا میں تھا۔ تمتع کی ترغیب دی۔