سنن النسائي - حدیث 2001

كِتَابُ الْجَنَائِزِ الْوُقُوفُ لِلْجَنَائِزِ صحيح أَخْبَرَنَا قُتَيْبَةُ، قَالَ: حَدَّثَنَا اللَّيْثُ، عَنْ يَحْيَى، عَنْ وَاقِدٍ، عَنْ نَافِعِ بْنِ جُبَيْرٍ، عَنْ مَسْعُودِ بْنِ الْحَكَمِ، عَنْ عَلِيِّ بْنِ أَبِي طَالِبٍ، أَنَّهُ ذُكِرَ الْقِيَامُ عَلَى الْجَنَازَةِ حَتَّى تُوضَعَ، فَقَالَ عَلِيُّ بْنُ أَبِي طَالِبٍ: «قَامَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ ثُمَّ قَعَدَ»

ترجمہ سنن نسائی - حدیث 2001

کتاب: جنازے سے متعلق احکام و مسائل جنازہ دیکھ کر کھڑا ہونا حضرت علی رضی اللہ عنہ کے سامنے جنازہ (زمین پر) رکھے جانے تک کھڑے رہنے کا ذکر کیا گیا تو حضرت علی بن ابی طالب رضی اللہ عنہ نے فرمایا: رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم (پہلے) کھڑے رہتے تھے، مگر بعد میں بیٹھے رہتے تھے۔ یہ بحث پیچھے گزر چکی ہے۔ دیکھیے حدیث نمبر: ۱۹۲۴ و مابعد۔