Book - حدیث 592

کِتَابُ التَّيَمَُ بَابٌ فِي الْجُنُبِ يَأْكُلُ وَيَشْرَبُ صحیح حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ عُمَرَ بْنِ هَيَّاجٍ حَدَّثَنَا إِسْمَعِيلُ بْنُ صُبَيْحٍ حَدَّثَنَا أَبُو أُوَيْسٍ عَنْ شُرَحْبِيلَ بْنِ سَعْدٍ عَنْ جَابِرِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ قَالَ سُئِلَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عَنْ الْجُنُبِ هَلْ يَنَامُ أَوْ يَأْكُلُ أَوْ يَشْرَبُ قَالَ نَعَمْ إِذَا تَوَضَّأَ وُضُوءَهُ لِلصَّلَاةِ

ترجمہ Book - حدیث 592

کتاب: تیمم کے احکام ومسائل باب: جنبی (غسل کیے بغیر ) کھا پی سکتا ہے سیدنا جابر بن عبداللہ ؓ سے روای تہے، انہوں نے فرمایا: نبی ﷺ سے جنبی کے متعلق سوال کیا گیا: کیا وہ سو سکتا ہے یا کھا پی سکتا ہے؟ آپ ﷺ نے فرمایا: ’’ہاں، جب وہ وضو کر لے، جس طرح نماز کے لئے وضو ہوتا ہے۔‘‘ مذکورہ روایت سنداً ضعیف ہے لیکن متناً ومعناً صحیح ہے جیسا کہ گزشتہ حدیث:585 اور صحیح مسلم کی حدیث نمبر :302 میں بھی یہ مسئلہ بیان ہوا ہے غالباً اسی وجہ سے دیگر محققین نے اس روایت کو صحیح قراردیا ہے۔