Book - حدیث 4335

كِتَابُ الزُّهْدِ بَابُ صِفَةِ الْجَنَّةِ صحیح حَدَّثَنَا أَبُو عُمَرَ الضَّرِيرُ حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ عُثْمَانَ عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ عَمْرٍو عَنْ أَبِي سَلَمَةَ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِنَّ فِي الْجَنَّةِ شَجَرَةً يَسِيرُ الرَّاكِبُ فِي ظِلِّهَا مِائَةَ سَنَةٍ لَا يَقْطَعُهَا وَاقْرَءُوا إِنْ شِئْتُمْ وَظِلٍّ مَمْدُودٍ(الواقعۃ:30)

ترجمہ Book - حدیث 4335

کتاب: زہد سے متعلق احکام و مسائل باب: جنت کی کیفیات حضرت ابو ہریرۃ ؓسے روایت ہے۔رسول اللہﷺ نے فرمایا: جنت میں ایک درخت ہے۔جس کے سائے میں ایک سوار سو سال تک چلتا رہے گا۔تب بھی سایہ ختم نہیں ہوگا۔ چاہو تو یہ آیت پڑھ لو (وَظِلٍّ مَّمْدُودٍ) اور لمبے لمبے سایوں میں۔ جنت میں دھوپ نہیں ھو گی لیکن درختوں کا وجود بھی ایک نعمت ھے جس سے منظر خشگوار ھوتا ھے۔ جنت کا ایک ایک درخت اتنا بڑا ھو گا اور اس کی شاخوں کا پھیلاْ وں اس قدر ھو گا کہ دنیا کے لحاظ سے ہزاروں میل پہ محیط ھو گا۔ اس سے جنت کی وسعت کا بھی اندازہ کیا جا سکتا ھے۔