Book - حدیث 3422

كِتَابُ الْأَشْرِبَةِ بَابُ الشُّرْبُ قَائِمًا صحیح حَدَّثَنَا سُوَيْدُ بْنُ سَعِيدٍ قَالَ: حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ مُسْهِرٍ، عَنْ عَاصِمٍ، عَنِ الشَّعْبِيِّ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ، قَالَ: «سَقَيْتُ النَّبِيَّ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مِنْ زَمْزَمَ، فَشَرِبَ قَائِمًا» فَذَكَرْتُ ذَلِكَ لِعِكْرِمَةَ فَحَلَفَ بِاللَّهِ، مَا فَعَلَ

ترجمہ Book - حدیث 3422

کتاب: مشروبات سے متعلق احکام ومسائل باب: کھڑے ہو کر پینا ا م شعبی رحمتہ اللہ علیہ نے حضرت عبد اللہ بن عبا س ؓ سے روایت کی کہ انھوں نے فر یا : میں نےنبی ﷺ کو زمزم کا پانی پیش کیا تو آپ نے کھڑے کھڑے پی لیا ۔ شعبی رحمتہ اللہ علیہ فر تے ہیں : میں نے عکرمہ ؓؓ کو یہ حدیث سنا ئی تو انھوں نے اللہ کی قسم کھا کر فر یا کہ نبی ﷺ نے ایسے نہیں کیا ۔ عکرمہ نے اپنی معلومات کے مطابق بیان کیا ایسے معاملات میں اثبات کی خبر کو نفی کی خبر پر ترجیح دی جاتی ہے۔