Book - حدیث 3407

كِتَابُ الْأَشْرِبَةِ بَابُ نَبِيذِ الْجَرِّ ضعیف الإسناد حَدَّثَنَا سُوَيْدُ بْنُ سَعِيدٍ قَالَ: حَدَّثَنَا الْمُعْتَمِرُ بْنُ سُلَيْمَانَ، عَنْ أَبِيهِ قَالَ: حَدَّثَتْنِي رُمَيْثَةُ، عَنْ عَائِشَةَ، أَنَّهَا قَالَتْ: أَتَعْجِزُ إِحْدَاكُنَّ أَنْ تَتَّخِذَ، كُلَّ عَامٍ، مِنْ جِلْدِ أُضْحِيَّتِهَا سِقَاءً؟ ثُمَّ قَالَتْ: «نَهَى رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، أَنْ يُنْبَذَ فِي الْجَرِّ، وَفِي كَذَا، وَفِي كَذَا، إِلَّا الْخَلَّ»

ترجمہ Book - حدیث 3407

کتاب: مشروبات سے متعلق احکام ومسائل باب: مٹکے میں بنی ہوئی نبیذ ام المو منین سید ہ عا ئشہ صدیقہ ؓ سے روایت ہے ’ انھوں نے فر یا :کیا کو ئی عو رت ایسے نہیں کر سکتی کہ ہر سال اپنے قربا نی کے جا نور کی کھال سے مشکزہ بنا لیا کر ے ؟( عورت کو یہ کام کرنا چا ہیے ۔) پھر فر یا : رسو ل اللہ ﷺ نے مٹکے میں اور فلا ں فلاں چیز میں نبیذ بنا نے سے منع فر مایا ہے ’ البتہ سر کہ رکھا جا سکتا ہے ۔’’