Book - حدیث 2523

كِتَابُ الْعِتْقِ بَابُ الْعِتْقِ صحیح حَدَّثَنَا أَحْمَدُ بْنُ سِنَانٍ حَدَّثَنَا أَبُو مُعَاوِيَةَ حَدَّثَنَا هِشَامُ بْنُ عُرْوَةَ عَنْ أَبِيهِ عَنْ أَبِي مُرَاوِحٍ عَنْ أَبِي ذَرٍّ قَالَ قُلْتُ يَا رَسُولَ اللَّهِ أَيُّ الرِّقَابِ أَفْضَلُ قَالَ أَنْفَسُهَا عِنْدَ أَهْلِهَا وَأَغْلَاهَا ثَمَنًا

ترجمہ Book - حدیث 2523

کتاب: غلام آزاد کرنے سے متعلق احکام ومسائل باب: آزاد کرنے کا بیان حضرت ابوذر ؓ سے روایت ہے، انہوں نے فرمایا: میں نے عرض کیا: اے اللہ کے رسول! کون سا غلام (لونڈی) آزاد کرنا افضل ہے؟ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: جو مالکوں کی نظر میں زیادہ عمدہ ہو، اور جس کی قیمت زیادہ ہو۔ (1)اللہ کی راہ میں عمدہ مال دینا افضل ہے اس طرح قیمتی غلام یا لونڈی آزادکرنا زیادہ افضل ہے۔ (2)عمدہ سےمرادیہ ہے اس کی خوبیوں کی وجہ سے مالک کے دل میں اس کی قدر زیادہ ایساغلام آزاد کرنے کو دل نہیں چاہتاجو مثلا:ہنرمندباتمیز اطاعت گزار ہو۔قیمتی سے مرادوہ ہے جس کی ظاہری خوبیوں(ظاہری شکل وصورت طاقتور اورصحت مندہوناوغیرہ)کی وجہ سےاس کی زیادہ قیمت ملنے کی توتع ہو- (3)اگر کسی کوجانور صدقے کے طورپردیاجائے تو اس صورت میں بھی عمداور قیمتی جانور کاثواب زیادہ ہوگا۔