Book - حدیث 2428

كِتَابُ الصَّدَقَاتِ بَابُ الْحَبْسِ فِي الدَّيْنِ وَالْمُلَازَمَةِ ضعیف حَدَّثَنَا هَدِيَّةُ بْنُ عَبْدِ الْوَهَّابِ حَدَّثَنَا النَّضْرُ بْنُ شُمَيْلٍ حَدَّثَنَا الْهِرْمَاسُ بْنُ حَبِيبٍ عَنْ أَبِيهِ عَنْ جَدِّهِ قَالَ أَتَيْتُ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بِغَرِيمٍ لِي فَقَالَ لِي الْزَمْهُ ثُمَّ مَرَّ بِي آخِرَ النَّهَارِ فَقَالَ مَا فَعَلَ أَسِيرُكَ يَا أَخَا بَنِي تَمِيمٍ

ترجمہ Book - حدیث 2428

کتاب: صدقہ وخیرات سے متعلق احکام ومسائل باب: قرض (کی عدم ادائیگی ) کی وجہ سے قید کرنا اور ساتھ رہنا حضرت ہرماس بن حبیب ؓ اپنے والد (حضرت حبیب بن ثعلبہ) سے اور وہ ہرماس کے دادا (حضرت ثعلبہ تمیمی عنبری ؓ) سے روایت کرتے ہیں، انہوں نے فرمایا: میں اپنے ایک مقروض کو لے کر نبی ﷺ کی خدمت میں حاضر ہوا۔ آپ نے مجھ سے فرمایا: (یہ جہاں جائے) اس کے ساتھ رہو۔ پھر نبی ﷺ شام کے وقت میرے پاس سے گزرے تو فرمایا: اے بنی تمیم کے بھائی! تمہارے قیدی کا کیا بنا؟