Book - حدیث 2110

كِتَابُ الْكَفَّارَاتِ بَابُ مَنْ قَالَ كَفَّارَتُهَا تَرْكُهَا صحیح حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ مُحَمَّدٍ قَالَ: حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ نُمَيْرٍ، عَنْ حَارِثَةَ بْنِ أَبِي الرِّجَالِ، عَنْ عَمْرَةَ، عَنْ عَائِشَةَ، قَالَتْ: قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: «مَنْ حَلَفَ فِي قَطِيعَةِ رَحِمٍ، أَوْ فِيمَا لَا يَصْلُحُ، فَبِرُّهُ أَنْ لَا يُتِمَّ عَلَى ذَلِكَ»

ترجمہ Book - حدیث 2110

کتاب: کفارے سے متعلق احکام و مسائل باب: بری بات کا کفارہ یہ ہے کہ اسے چھوڑ دے حضرت عائشہ ؓا سے روایت ہے، رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: جس نے قطع رحمی کی قسم کھائی، یا کسی ناجائز کام کی قسم کھائی تو اس قسم کا پورا کرنا یہی ہے کہ اسے چھوڑ دے۔ مذکورہ روایت کو ہمارے فاضل محقق نے سندا ضعیف قرار دیا ہے جبکہ دیگر محققین نے شواہد کی بنا پر قابل عمل اور قابل حجت قرار دیا ہے ۔ تفصیل کے لیے دیکھیے : ( الصحیحۃ ، رقم : 2334) اس کا مطلب یہ ہے کہ کفارہ نہ دے سکے تو اکم از کم اس گناہ سے پرہیز تو کرے جس کے کرنے کا وعدہ کرلیا ہے ۔ گناہ سے بچنا بھی نیکی ہے ۔