Book - حدیث 1481

كِتَابُ الْجَنَائِزِ بَابُ مَا جَاءَ فِي شُهُودِ الْجَنَائِزِ صحیح حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ بَشَّارٍ قَالَ: حَدَّثَنَا رَوْحُ بْنُ عُبَادَةَ قَالَ: حَدَّثَنَا سَعِيدُ بْنُ عُبَيْدِ اللَّهِ بْنِ جُبَيْرِ بْنِ حَيَّةَ قَالَ: حَدَّثَنِي زِيَادُ بْنُ جُبَيْرِ بْنِ حَيَّةَ، سَمِعَ الْمُغِيرَةَ بْنَ شُعْبَةَ، يَقُولُ سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ: «الرَّاكِبُ خَلْفَ الْجِنَازَةِ وَالْمَاشِي مِنْهَا حَيْثُ شَاءَ»

ترجمہ Book - حدیث 1481

کتاب: جنازے سے متعلق احکام و مسائل باب : جنازے کے ساتھ جانا مغیرہ بن شعبہ ؓ سے روایت ہے ، انہوں نے فرمایا: میں نے رسول اللہ ﷺ سے سنا آپ فر رہے تھے : ’’ سوار جنازے کے پیچھے چلے اور پیدل جہاں چاہے( آگے ، پیچھے دائیں یا بائیں )۔‘‘ اس سے معلوم ہوا کہ جنازے کے ساتھ جاتے ہوئے بھی سوار ہو کر جانا جائز ہے اگرچہ افضل نہیں۔البتہ سوار کو جنازے کے پیچھے رہنا چاہیے۔