Book - حدیث 1097

كِتَابُ إِقَامَةِ الصَّلَاةِ وَالسُّنَّةُ فِيهَا بَابُ مَا جَاءَ فِي الزِّينَةِ يَوْمَ الْجُمُعَةِ حسن صحیح حَدَّثَنَا سَهْلُ بْنُ أَبِي سَهْلٍ وَحَوْثَرَةُ بْنُ مُحَمَّدٍ قَالَا حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ سَعِيدٍ الْقَطَّانُ عَنْ ابْنِ عَجْلَانَ عَنْ سَعِيدٍ الْمَقْبُرِيِّ عَنْ أَبِيهِ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ وَدِيعَةَ عَنْ أَبِي ذَرٍّ عَنْ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ مَنْ اغْتَسَلَ يَوْمَ الْجُمُعَةِ فَأَحْسَنَ غُسْلَهُ وَتَطَهَّرَ فَأَحْسَنَ طُهُورَهُ وَلَبِسَ مِنْ أَحْسَنِ ثِيَابِهِ وَمَسَّ مَا كَتَبَ اللَّهُ لَهُ مِنْ طِيبِ أَهْلِهِ ثُمَّ أَتَى الْجُمُعَةَ وَلَمْ يَلْغُ وَلَمْ يُفَرِّقْ بَيْنَ اثْنَيْنِ غُفِرَ لَهُ مَا بَيْنَهُ وَبَيْنَ الْجُمُعَةِ الْأُخْرَى

ترجمہ Book - حدیث 1097

کتاب: نماز کی اقامت اور اس کا طریقہ باب: جمعے کے دن اچھا لباس پہننے کا بیان سیدنا ابوذر ؓ سے روایت ہے، نبی ﷺ نے فرمایا: ’’جو شخص جمعے کے دن اچھی طرح غسل کرے، اچھی طرح سنوار کر وضو کرے، اپنا بہترین لباس پہنے اور اللہ نے اس کی قسمت میں گھروالوں کی جو خوشبو لکھی ہو وہ لگالے۔ پھر جمعہ پڑھنے آئے تو فضول حرکات نہ کرے اور دو آدمیوں کے درمیان جدائی نہ کرے( اکٹھے بیٹھے ہوئے دو آدمیوں کے درمیان نہ بیٹھے) تو اس کے اس جمعے اور دوسرے جمعے کے درمیان کے( پورے ہفتے کے) گناہ معاف کر دیے جاتے ہیں۔‘‘ 1۔وضو اور غسل توجہ سے اچھی طرح کرنا جمعے کی اہمیت کااعتراف ہے۔2۔جمعے کے لئے خوشبو لگا کر آنا چاہیے۔اگر مرد کے پاس خوشبو نہ ہو تو بیو ی کی خوشبو استعما کرسکتا ہے۔3۔مرد اور عورت کے استعمال کی خوشبو میں فرق ہے۔مرد کی خوشبو تیز مہک والی اور عورت کی خوشبو ہلکی مہک والی ہونی چاہیے۔دیکھئے۔(سنن نسائی الزینۃ باب الفصل بین طیب الرجال وطیب النساء حدیث 5120)عورت تیز مہک والی خوشبواستعمال نہیں کرسکتی۔مرد ضرورت پڑنے پر ہلکی مہک والی خوشبو استعمال کرسکتا ہے۔4۔بعد میں آکر اگلی صف میں جگہ بنانے کی کوشش کرنا اور پہلے سے آئے ہوئے نمازیوں کو پریشان کرنا درست نہیں۔