الادب المفرد - حدیث 773

كِتَابُ بَابُ قَوْلِ الرَّجُلِ لِلرَّجُلِ: وَيْلَكَ حَدَّثَنَا إِبْرَاهِيمُ بْنُ الْمُنْذِرِ قَالَ: حَدَّثَنَا أَبُو عَلْقَمَةَ عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مُحَمَّدِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ أَبِي فَرْوَةَ، حَدَّثَنِي الْمِسْوَرُ بْنُ رِفَاعَةَ الْقُرَظِيُّ قَالَ: سَمِعْتُ ابْنَ عَبَّاسٍ، وَرَجُلٌ يَسْأَلُهُ، فَقَالَ: إِنِّي أَكَلْتُ خُبْزًا وَلَحْمًا، فَهَلْ أَتَوَضَّأُ؟ فَقَالَ: وَيْحَكَ، أَتَتَوَضَّأُ مِنَ الطَّيِّبَاتِ؟

ترجمہ الادب المفرد - حدیث 773

کتاب کسی کو ’’ویلك‘‘ کہنے کا حکم حضرت مسور بن رفاعہ قرظی رحمہ اللہ سے روایت ہے کہ میں نے ابن عباس رضی اللہ عنہما سے سنا:جب ایک آدمی نے ان سے پوچھا:میں نے روٹی گوشت کھایا ہے تو کیا اس سے وضو کروں؟ آپ نے فرمایا:تجھ پر افسوس کیا تو طیبات، یعنی پاکیزہ چیزیں کھانے سے بھی وضو کرے گا۔
تخریج : صحیح۔