الادب المفرد - حدیث 298

كِتَابُ بَابُ الْبُخْلِ حَدَّثَنَا هِشَامُ بْنُ عَبْدِ الْمَلِكِ قَالَ: سَمِعْتُ ابْنَ عُيَيْنَةَ قَالَ: سَمِعْتُ ابْنَ الْمُنْكَدِرِ، سَمِعْتُ جَابِرًا: مَا سُئِلَ النَّبِيُّ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عَنْ شَيْءٍ قَطُّ فَقَالَ: لَا

ترجمہ الادب المفرد - حدیث 298

کتاب بخل کی مذمت کا بیان حضرت جابر رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے جب بھی کوئی چیز طلب کی گئی آپ نے کبھی یہ نہیں کہا کہ میں نہیں دوں گا۔
تشریح : نبی صلی اللہ علیہ وسلم بخل کی مذموم صفت سے مبرا تھے بلکہ فقیری میں شہنشاہی کی مثال تھے۔ گھر میں نہ ہوتا تو ادھار لے کر دیتے یا آئندہ آنے کا کہہ دیتے۔ نفي میں جواب نہ دیتے۔ (تفصیلی فوائد کے لیے دیکھیے، حدیث:۲۷۹)
تخریج : صحیح:تقدم تخریجه برقم:۲۷۹۔ نبی صلی اللہ علیہ وسلم بخل کی مذموم صفت سے مبرا تھے بلکہ فقیری میں شہنشاہی کی مثال تھے۔ گھر میں نہ ہوتا تو ادھار لے کر دیتے یا آئندہ آنے کا کہہ دیتے۔ نفي میں جواب نہ دیتے۔ (تفصیلی فوائد کے لیے دیکھیے، حدیث:۲۷۹)