الادب المفرد - حدیث 190

كِتَابُ بَابُ هَلْ يُعِينُ عَبْدَهُ؟ حَدَّثَنَا آدَمُ قَالَ: حَدَّثَنَا شُعْبَةُ قَالَ: حَدَّثَنَا أَبُو بِشْرٍ قَالَ: سَمِعْتُ سَلَّامَ بْنَ عَمْرٍو يُحَدِّثُ، عَنْ رَجُلٍ مِنْ أَصْحَابِ النَّبِيِّ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ: قَالَ النَّبِيُّ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: ((أَرِقَّاكُمْ إِخْوَانُكُمْ، فَأَحْسِنُوا إِلَيْهِمْ، اسْتَعِينُوهُمْ عَلَى مَا غَلَبَكُمْ، وَأَعِينُوهُمْ عَلَى مَا غُلِبُوا))

ترجمہ الادب المفرد - حدیث 190

کتاب کام کاج میں غلام کی مدد کرنا نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے ایک صحابی سے روایت ہے کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:’’تمہارے غلام تمہارے بھائی ہیں، لہٰذا ان سے حسن سلوک کرو۔ جو کام تم سے نہ ہوسکے اس میں ان سے مدد لو اور جو کام ان سے نہ ہوسکے اس میں ان کی مدد کرو۔‘‘
تشریح : اس کی سند ضعیف ہے۔
تخریج : ضعیف:أخرجه أحمد:۲۰۵۸۱۔ وأبي یعلی:۹۲۰۔ وأبو نعیم في معرفة الصحابة:۳۴۳۰۔ الضعیفة:۱۶۴۱۔ اس کی سند ضعیف ہے۔