Book - حدیث 998

کِتَابُ تَفْرِيعِ اسْتِفْتَاحِ الصَّلَاةِ بَابُ فِي السَّلَامِ صحیح حَدَّثَنَا عُثْمَانُ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ، حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ زَكَرِيَّا وَوَكِيعٌ، عَنْ مِسْعَرٍ، عَنْ عُبَيْدِ اللَّهِ ابْنِ الْقِبْطِيَّةِ، عَنْ جَابِرِ بْنِ سَمُرَةَ، قَالَ: كُنَّا إِذَا صَلَّيْنَا خَلْفَ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، فَسَلَّمَ أَحَدُنَا أَشَارَ بِيَدِهِ مِنْ عَنْ يَمِينِهِ، وَمِنْ، عَنْ يَسَارِهِ، فَلَمَّا صَلَّى, قَال:َ >مَا بَالُ أَحَدِكُمْ يُومِي بِيَدِهِ, كَأَنَّهَا أَذْنَابُ خَيْلٍ شُمْسٍ، إِنَّمَا يَكْفِي أَحَدَكُمْ –أَوْ: أَلَا يَكْفِي أَحَدَكُمْ أَنْ يَقُولَ هَكَذَا- وَأَشَارَ بِأُصْبُعِهِ-، يُسَلِّمُ عَلَى أَخِيهِ مِنْ، عَنْ يَمِينِهِ، وَمِنْ عَنْ شِمَالِهِ!؟

ترجمہ Book - حدیث 998

کتاب: نماز شروع کرنے کے احکام ومسائل باب: (اختتام نمازپر)سلام پھیرنے کے احکام ومسائل سیدنا جابر بن سمرہ ؓ بیان کرتے ہیں کہ جب ہم رسول اللہ ﷺ کے پیچھے نماز پڑھتے تو سلام کہتے ہوئے اپنے ہاتھ سے دائیں اور بائیں اشارہ کرتے تھے ۔ جب آپ ﷺ نے نماز پڑھ لی تو فرمایا ” تمہیں کیا ہوا ہے کہ اپنے ہاتھوں سے یوں اشارے کرتے ہو گویا سرکش گھوڑوں کی دمیں ہوں ؟ تمہیں یہی کافی ہے ۔ “ یا فرمایا ” کیا تمہارے ایک کے لیے یہ کافی نہیں ہے کہ یوں کرے اور اپنے انگلی سے اشارہ کیا ۔ اپنے بھائی پر دائیں اور بائیں جانب سلام کہے ۔ “